’’سینیٹ انتخابات: سندھ میں 5 سیٹیں نکال سکتے ہیں‘‘

0


کراچی: وفاقی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی امین الحق کا کہنا ہے کہ سندھ میں ایم کیو ایم ممبران کو دھمکانے اور خریدنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق وفاقی وزیر امین الحق نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایم کیو ایم نے سینیٹ ٹکٹ کے حوالے سے میرٹ پر فیصلہ کیا، سینیٹ انتخابات میں پی ٹی آئی، ایم کیو ایم ایک دوسرے کو سپورٹ کریں گے۔

امین الحق نے کہا کہ خواتین کی نشست پر پی ٹی آئی ایم کیو ایم کو سپورٹ کرے گی، ٹیکنو کریٹ نشست پر ایم کیو ایم پی ٹی آئی کو سپورٹ کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ مل کر الیکشن لڑا تو سندھ میں 11 میں سے 5 سیٹیں نکال سکتے ہیں، سندھ حکومت اور آصف زرداری زور زبردستی کی کوشش کررہے ہیں، زور زبردستی ختم کرنے کے لیے ایم کیو ایم اوپن بیلٹ کو سپورٹ کرتی ہے۔

امین الحق نے کہا کہ ایم کیو ایم حلیم عادل شیخ کی گرفتاری کی مذمت کرتی ہے، ایم کیو ایم کا مطالبہ ہے حلیم عادل شیخ پر دہشت گردی کی دفعات ختم کی جائیں، ان کی گرفتاری پر سندھ اسمبلی میں احتجاج کریں گے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ سیاسی اختلافات کو اتنا نہ بڑھایا جائے کل خود پی پی کو سہنے میں مشکل ہو، سیاست میں ریڈ لائن عبور نہیں کرنی چاہیے۔

امین الحق نے کہا کہ یوسف رضا گیلانی کی جانب سے فون پر رابطہ کیا گیا، ان کے رابطے سے متعلق خالد مقبول کو آگاہ کردیا، ایم کیو ایم کے دروازے بطور سیاسی جماعت تمام لوگوں کے لیے کھلے ہیں۔

LEAVE A REPLY